[add59]
Home Urdu News بنگلہ دیش کا پاکستا ن کیخلاف ٹیسٹ سیریز نیوٹرل وینیو پر کھیلنے...

بنگلہ دیش کا پاکستا ن کیخلاف ٹیسٹ سیریز نیوٹرل وینیو پر کھیلنے پر اصرار

SHARE
[add57]

لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔25دسمبر 2019ء) بنگلا دیش کرکٹ بورڈ(بی سی بی) پاکستان کےخلاف سکیورٹی صورتحال کا بہانہ بناتے ہوئے پہلے مرحلے میں ٹی ٹونٹی میچز اور بعد میں ہی ٹیسٹ کھیلنے پر بضد ہے۔سری لنکن کرکٹ ٹیم پاکستان میں ون ڈے، ٹی ٹونٹی اور تاریخی ٹیسٹ سیریز کھیل کر وطن واپس جاچکی ہے لیکن بنگلادیش کرکٹ بورڈ کی ناں اب بھی ہاں میں نہیں بدلی۔بی سی بی چاہتا ہے کہ پہلے ٹی ٹونٹی میچز کھیلیں گے پھر اس کے بعد سکیورٹی کی صورتحال دیکھ کر ہی پاکستان میں ٹیسٹ میچز کھیلنے کا فیصلہ کریں گے۔پاکستان کرکٹ بورڈ( پی سی بی) کی جانب سے بنگلا دیش بورڈ کو ایک سخت خط بھی لکھا گیا ہے جس میں پوچھا گیا ہے کہ ٹیسٹ میچز نہ کھیلنے کی کوئی خاص وجہ بتائی جائے۔ بی سی بی نے پی سی بی کو خط کا جواب تو نہ دیا لیکن ڈھاکا میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہو ئے چیف ایگزیکٹو بنگلا دیش کرکٹ بورڈ نظام الدین چوہدری نے کہا کہ پاکستان چاہتا ہے کہ مکمل دورہ کیا جائے لیکن ہمیں اپنے کھلاڑیوں کے حوالے سے فیصلہ کرنا ہے۔

نظام الدین چوہدری کا کہنا ہے کہ ہم پہلے پاکستان میں ٹی ٹونٹی سیریز کھیلنا چاہتے ہیں تاکہ پاکستان کی صورتحال کا اندازہ ہو سکے،ہمارے سٹیک ہولڈرز بھی اس حق میں نہیں ہیں کہ ہم ٹیسٹ سیریز کھیلنے پاکستان جائیں،ہم پی سی بی کو ٹیسٹ سیریز نیوٹرل وینیو پر کھیلنے کےلئے قائل کرنےکی کوشش کریں گے۔دوسری جانب پی سی بی کا کہنا ہے کہ خط کا جواب دیا گیا ہے نہ رابطہ کیا گیا ہے، بنگلا دیش کرکٹ بورڈ کے جواب کے بعد اپنا رد عمل دیں گے۔گذشتہ روز پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین احسان مانی نے دو ٹوک الفاظ میں کہا تھا کہ پاکستان اب ہوم سیریز نیوٹرل مقام پر نہیں کھیلے گا، بنگلادیش کو ثابت کرنا ہوگا کہ پاکستان محفوظ ملک نہیں ہے۔نیشنل سٹیڈیم کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے احسان مانی نے کہا کہ پی سی بی بنگلا دیش کرکٹ بورڈ سے رابطہ میں ہے اور امید ہے کہ وہ پاکستان نہ آنےکی کوئی وجہ نہیں ڈھونڈیں گے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر بنگلادیشی ٹیم نہیں آئی تو معاملہ آئی سی سی ڈسپیوٹ میں بھی جاسکتا ہے لیکن فی الحال بات چیت جاری ہے اسلئے مزید تبصرہ نہیں کرسکتے۔خیال رہے کہ بنگلا دیش کرکٹ ٹیم کا جنوری میں پاکستان کا دورہ شیڈول ہے جس میں 3 ٹی ٹونٹی اور 2 ٹیسٹ میچز شامل ہیں، ٹیسٹ میچز آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ کا حصہ ہیں۔

[add58]